روزانہ صرف ایک اخروٹ کھانےسے جسم میں کیا ہوتا؟

روزانہ صرف ایک اخروٹ کھانےسے جسم میں کیا ہوتا؟

اخروٹ انسانی جسم اور دماغ کےلیے بہت مفید سمجھے جاتے ہیں۔ کیونکہ اس کے بے حد فائدے ہیں۔ لیکن جہاں اس کے فوائد ہیں۔ اور وہاں اس کے کچھ  نقصان بھی ہیں۔ جس کے بارے میں حضور اکرم ﷺ نے بتایا ہوا ہے۔ آپ کو اخروٹ کے فوائد اور کچھ نقصان کے بارے میں بتائیں گے ۔سب سےپہلے طب نبوی کے روشنی میں آپ کو اخروٹ کے  کچھ نقصان  بتا تے ہیں کہ نبی کریم ﷺنے اخروٹ کے بارے میں بتاتے ہیں۔ نبی اکرمﷺ کافرمان ہے کہ پنیر  بھی بیماری  اور اخروٹ بھی ۔ لیکن جب یہ دونوں پیٹ میں اترجاتے ہیں۔ تو پھر شفاء ہے۔ اور نبی کریمﷺ کی بات حق ہے۔ جب آپ ﷺ نے فرمادیا تو یہ اخروٹ اور پنیر بھی بیماری ہے۔ تو یہ بیماری ہے۔ لیکن جب دونوں کو ملا کر کھالیا جائے۔ تو پھر شفاء ہے۔ بحثیت مسلمان ہمارے ایمان کا تقاضا ہے کہ نبی  پاک  ﷺ کی ہر بات حق اور سچ ہے۔ ان کی کہی ہوئی ہر بات آنکھیں بند کرکے یقین کرتے  ہیں۔

اس سے ثابت یہ ہوتا ہے اگر  آپ کبھی بھی اخروٹ کھائیں ایک یا دو دانے اخروٹ کے کھائیں۔ اس سے زیادہ مت کھائیں  یا کوشش کریں انہیں ٹھنڈی تاثیر والی جو چیزیں ہوتی ہیں ۔ اس کے ساتھ کھائیں ۔ کیونکہ نبی کریمﷺ نے اس کو بیماری کہا ہے۔ لہٰذ ا اخروٹ کو کم سےکم کھایا جائے تو زیادہ بہتر ہے۔ اب آپ کو بتاتے ہیں ایک یا دو عدد اخروٹ کس کس بیماری  میں فائد ہ دیتے ہیں۔ اخروٹ کی گریاں ، دمہ ، جوڑوں کی سوزش ، چنبل اور دل کی بیماریوں  کے لیے بہت مفید  مانا جاتا ہے۔ اخروٹ کی گری اور اس سے نکلنے والا جو تیل ہے انسانی جسم میں خ ون کی روانی کو بہتر بناتا ہے۔ جس سے شادی شدہ  مردوں کو ازدواجی فرائض جو ہیں۔ وہ ادا کرنے میں آسانی ہوتی ہے۔ پیٹ کے کیڑوں کو ختم کرنے کےلیے اخروٹ بہت اہم کردار دا کرتا ہے۔

اس کے علاوہ اخروٹ کی چھال جو ہے اگر اس کوپانی میں ڈال کر اس سے غسل کرلیا جائے تو آپ کو جوڑوں کے درد میں افاقہ ہوگا۔ ایسی خواتین جو بچوں کو دودھ پلاتی ہوں۔ وہ اخروٹ ہرگز مت کھائیں ۔ کیونکہ اخروٹ کی گریاں  عورتوں کے دودھ  میں کمی لاتی ہیں۔ حاملہ خواتین  اخروٹ استعمال کرسکتی ہیں۔ بلکہ حاملہ خواتین اخروٹ بہت مفید ہے۔ جیسا کہ پہلے بھی آپ کو بتایا ہے کہ اخروٹ کسی بھی ٹھنڈی چیز کے ساتھ کھانا مفید ہوگا۔ ورنہ ایک یا دو اخروٹ  جو ہے ان سے زیادہ کھانا آپ کے لیے نقصان دہ ہے ۔ ایک یا دو اخروٹ ایک دن میں کھانے چاہیں۔ پھر اگلے دن کھالیں۔ ایک دن ناغہ کرکے پھر اس سے اگلے دن کھا لیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *